Wednesday, 3 August 2011

داستاں اداسی کی




کوئی اک خوبصورت اور اچھا دوست مل جائے
کسی اک غیر فانی شعر کی تخلیق ممکن ہو
یہی دو ہیں مری پرکار کے نقطے، یہی میں ہوں
یہی ہے داستاں میری اداسی کی


No comments:

Post a Comment